پاکستانی ٹیم کو دشمن کی ضرورت نہیں یہ خود بہت ہیں، بھارت سے بدترین شکست پر وسیم اکرم کا تبصرہ

سابق کپتان وسیم اکرم نے بھارتی اسپورٹس چینل پر پاکستان کی بھارت کے خلاف بدترین کارکردگی پر تبصرہ کرتے ہوئے خاصی ناراضگی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ہم ان کھلاڑیوں کو کیا چوسنی دیں گے؟ انہیں سمجھائیں گے کہ صورتحال کی آگاہی کیا ہوتی ہے، یہ پچھلے 8-10 سال سے کھیل رہے ہیں، کیا بابر اور کوچ انہیں بتائیں گے کہ کیسے کھیلنا ہے؟

ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ 2024 میں بھارت سے شکست پر سابق کپتان وسیم اکرم نے کہا کہ پاکستان کرکٹ ٹیم کو دشمن کی ضرورت نہیں ہے، یہ خود ہی اپنے لیے کافی ہیں۔ سابق کپتان نے مطالبہ کیا کہ اب وقت آ گیا ہے کہ پاکستان کی نئی ٹیم بنائی جائے۔

مزید پڑھیں:
آج کینیڈا کیخلاف افتخار احمد کو ڈراپ کیے جانے کا امکان

جب تک ”اگر مگر“ ختم نہیں ہوتا ہمت نہیں ہاریں گے، اظہر محمود

وسیم اکرم نے بھارت کے خلاف محمد رضوان کی بیٹنگ پر تنقید کی اور کہا کہ کیا رضوان کو میں بتاؤں گا کہ اہم بولر ایک اوور کے لیے آیا ہے تو اس کے اوور میں سنگل لو، ہماری ٹیم نے 10 اوورز کے بعد کوئی چوکا نہیں مارا اور کوشش بھی نہیں کی، افتخار احمد کو میں بولنگ کروں تو وہ ایک ہی شاٹ کھیلے گا، آف سائیڈ پر بھی کھیلنا سیکھ لو، 120 رنز کے ہدف کا تعاقب بھی نہ کر سکے، بطور پاکستانی شرمندگی محسوس ہو رہی ہے۔

واضح رہے کہ ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ میں امریکا کے بعد بھارت سے شکست پر شائقین کرکٹ بہت ناراض ہیں اور پاکستان ٹیم میں تبدیلی کا مطالبہ کر رہے ہیں۔ چیئرمین پی سی بی محسن نقوی نے بھی بھارت سے شکست کو مایوس کن قرار دیتے ہوئے قومی ٹیم میں بڑی تبدیلیوں کا عندیہ دیا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں