پاکستان کی بیٹنگ لائن بری طرح ناکام، ٹیم 120 رنز بھی نہ بنا سکی، بھارت 6 رنز سے جیت گیا

آئی سی سی مینز ٹی ٹوئنٹی ورلڈکپ میں بھارت نے پاکستان کو 6 رنز سے شکست دے دی۔ یہ میچ نیویارک کے نساؤ کاؤنٹی انٹرنیشنل کرکٹ سٹیڈیم میں کھیلا گیا، جو بارش کے باعث دیر سے شروع ہوا۔ پاکستان کے کپتان بابر اعظم نے ٹاس جیت کر بھارت کو پہلے بیٹنگ کی دعوت دی۔

بھارت کی بیٹنگ لائن پاکستان کے سامنے بے بس ہو گئی اور 19 اوورز میں 119 رنز بنا کر ڈھیر ہو گئی۔ 120 رنز کے ہدف کے جواب میں پاکستان کی ٹیم 20 اوورز میں 7 وکٹوں کے نقصان پر 113 رنز بنا سکی۔

پہلا اوور مکمل ہونے کے بعد 8 رنز پر بارش شروع ہو گئی اور میچ روک دیا گیا۔ بارش تھمنے کے بعد میچ دوبارہ شروع ہوا اور ویرات کوہلی 4 رنز بنا کر نسیم شاہ کی گیند پر کیچ آؤٹ ہو گئے۔ بھارت کی پہلی وکٹ 12 رنز پر گری۔

بھارت کی دوسری وکٹ 19 رنز پر گری جب کپتان روہت شرما شاہین آفریدی کی گیند پر کیچ آؤٹ ہوئے۔ تیسری وکٹ 58 رنز پر گری جب اکثر پٹیل 20 رنز بنا کر نسیم شاہ کی گیند پر کلین بولڈ ہو گئے۔

چوتھی وکٹ 89 رنز پر گری جب سوریا کمار یادیو 7 رنز بنا کر حارث رؤف کی گیند پر کیچ آؤٹ ہوگئے۔ پانچویں وکٹ 95 رنز پر گری جب شیوام ڈوبے 3 رنز بنا کر نسیم شاہ کا شکار بنے چھٹی اور ساتویں وکٹ 96 رنز پر گری جب محمد عامر نے لگاتار دو گیندوں پر دو کھلاڑیوں کو آؤٹ کیا۔

ریشبھ پنٹ 42 رنز اور رویندرا جڈیجا صفر پر آؤٹ ہوئے۔ آٹھویں وکٹ 112 رنز پر گری جب ہاردک پانڈیا 7 رنز بنا کر حارث رؤف کا شکار بنے۔ نویں وکٹ بھی 112 رنز پر گری، جسپریت بمرا صفر پر حارث رؤف کا شکار بنے۔ آخری وکٹ ارشدیپ سنگھ کی تھی جو 9 رنز بنا کر رن آؤٹ ہوئے۔

یہ پہلی بار تھا کہ ٹی ٹوئنٹی انٹرنیشنلز میں بھارتی ٹیم پاکستان کے خلاف آل آؤٹ ہوئی اور 119 آل آؤٹ بھارت کا پاکستان کے خلاف کم ترین اسکور ہے۔

https://x.com/TheRealPCB/status/1799891665894707477?t=ybe3TrOpfMg5FFrJ50qQmQ&s=19

پاکستان کی جانب سے نسیم شاہ نے 4 اوورز میں 21 رنز دے کر 3 وکٹیں حاصل کیں۔ شاہین آفریدی نے 4 اوورز میں 29 رنز دے کر 1 وکٹ حاصل کی۔ حارث رؤف نے 3 اوورز میں 21 رنز دے کر 3 وکٹیں حاصل کیں۔

محمد عامر نے 4 اوورز میں 23 رنز دے کر 2 کھلاڑیوں کو آؤٹ کیا۔ عماد وسیم نے 3 اوورز میں بغیر وکٹ کے 17 رنز دیے۔ افتخار احمد نے ایک اوور میں 7 رنز دیے۔

پاکستان کی بیٹنگ میں پہلی وکٹ 26 رنز پر گری جب بابر اعظم 13 رنز بنا کر آؤٹ ہوئے۔ دوسری وکٹ 57 رنز پر گری، عثمان خان 13 رنز بنا کر آؤٹ ہوئے۔

تیسری وکٹ 73 رنز پر گری، فخر زمان 13 رنز بنا کر آؤٹ ہوئے۔ چوتھی وکٹ 80 رنز پر گری جب محمد رضوان 31 رنز بنا کر آؤٹ ہوئے۔ پانچویں وکٹ 88 رنز پر گری جب شاداب خان 4 رنز بنا کر آؤٹ ہوئے۔

چھٹی وکٹ 102 رنز پر گری، افتخار احمد 5 رنز بنا کر آؤٹ ہوئے۔ ساتویں وکٹ 113 رنز پر گری جب عماد وسیم 15 رنز بنا کر آؤٹ ہوئے۔ نسیم شاہ 10 رنز کے ساتھ ناٹ آؤٹ رہے۔

بھارت کی جانب سے جسپریت بمرا نے 3 وکٹیں حاصل کیں اور مین آف دی میچ بنے۔ ہاردک پانڈیا نے 2 کھلاڑیوں کو آؤٹ کیا، ارشدیپ سنگھ اور اکثر پٹیل نے ایک ایک وکٹ حاصل کی۔

واضح رہے کہ پاکستان ٹیم میں ایک تبدیلی کی گئی اور اعظم خان کی جگہ عماد وسیم کو شامل کیا گیا۔ پاکستان کی ٹیم کی قیادت بابر اعظم کر رہے تھے، اور دیگر کھلاڑیوں میں محمد رضوان، عثمان خان، شاداب خان، فخر زمان، افتخار احمد، عماد وسیم، محمد عامر, نسیم شاہ, شاہین شاہ آفریدی, اور حارث رؤف شامل تھے۔

بھارتی ٹیم کی قیادت روہت شرما کر رہے تھے، اور دیگر کھلاڑیوں میں ویرات کوہلی، ریشبھ پنٹ، سوریا کمار یادیو، شیوام ڈوبے، ہاردک پانڈیا، رویندرا جڈیجا، اکثر پٹیل، جسپریت بمرا، محمد سراج، اور ارشدیپ سنگھ شامل تھے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں