کم از کم پاکستانی سفیر مظلوم سٹوڈنٹس سے ایک بار ملاقات ہی کر لیتے

حکومت پاکستان کو متعلقہ مسائل کے حل میں فوری اقدامات کی ضرورت ہے۔ کرغیزستان میں پاکستانی طلباء و طالبات کی مدد کا مطالبہ بھی ایک اہم اقدام ہے۔ ان طلباء و طالبات کی وضع کو سنجیدگی سے دیکھا جانا چاہئے۔ معمولاً، خارجی ملکوں میں پڑھنے والے طلباء و طالبات اپنے ملک کا نام روشن کرتے ہیں اور ان کی مدد اور توجہ اہم ہے۔

ان کی مدد کے لئے، پاکستانی سفیر کو بھی انکی مدد کی فوری فراہمی کا ذمہ داری دینی چاہئے۔ سفیر کو یہ ضمانت دینی چاہئے کہ پاکستان کی حکومت ان طلباء و طالبات کی مدد کے لئے ہر ممکن طریقہ کار کا استعمال کرے۔

پاکستانی میڈیکل طلباء اور طالبات کی مدد ان کے لئے ضروری ہے۔ ان کا اس مشکل وقت میں ساتھ دینا ان کی تعلیمی سفر میں اہم کردار ادا کرے گا۔ اس طرح کی فعالیتیں ان کے لئے ایک اہم سہارا ہوتی ہیں اور ان کی حفاظت اور تعلیمی مسئلوں کا حل ممکن بناتی ہیں

ڈاکٹر فیض اللہ خان کی اس مسئلے پر آراء کا احسن محاورہ کیا گیا ہے۔ ان کی سوچ میں انسانیت اور تعلیمی فروغ دونوں کو اہمیت دی جاتی ہے۔ ان کی باتوں کو سن کر حکومت کو اس مسئلے پر عمل کرنے کی سرگرمی میں اضافہ کرنا چاہئے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں