پاکستان کا ’’فتح 2‘‘ گائیڈڈ راکٹ سسٹم کا کامیاب تجربہ

پاکستان نے ’’فتح 2‘‘ گائیڈڈ راکٹ سسٹم کا کامیاب تجربہ کرتے ہوئے دفاعی شعبے میں ایک اور اہم سنگ میل عبور کر لیا۔ پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کے مطابق اس تجربے کا مقصد لانچ کی مشقوں اور طریقہ کار کو مکمل کرنا تھا۔

یہ راکٹ سسٹم 400 کلومیٹر تک نشانہ بنانے کی صلاحیت رکھتا ہے، ’’فتح 2‘‘ جدید نیوی گیشن سسٹم ،منفرد رفتار اور قابل تدبیر جیسی خصوصیات سے لیس ہے۔ ’’فتح 2‘‘ راکٹ کے اندر درستگی سے اہداف کو نشانہ بنانے کی صلاحیت اور کسی بھی میزائل دفاعی نظام کو شکست دینے کی قابلیت بھی موجود تھی۔

آئی ایس پی آر کا کہنا تھا کہ ’’فتح 2‘‘ راکٹ سسٹم کو پاکستان کی آرٹلری ڈویژنز میں شامل کیا جا رہا ہے۔ فتح ٹو پاک فوج کے روایتی ہتھیاروں کی رسائی اور مہلکیت کو نمایاں طور پر اپ گریڈ کرے گا۔

چیف آف جنرل سٹاف اور مسلح افواج کے اعلیٰ افسران نے ’’فتح 2‘‘ راکٹ سسٹم کے تجربے کا مشاہدہ کیا؛ جبکہ چیئرمین جوائنٹ چیفس آف سٹاف کمیٹی اور تینوں مسلح افواج کے سربراہان نے بھی اس کامیاب تجربے پر مبارک باد پیش کی۔

’’فتح 2‘‘ راکٹ کے کامیاب تجربے پر صدر مملکت آصف علی زرداری اور وزیراعظم محمد شہباز شریف نے بھی پاک فوج اور سائنسدانوں کو مبارکباد پیش کی۔

’’فتح 2‘‘ راکٹ کے کامیاب تجربے پر وزیراعظم شہباز شریف نے کہا کہ یہ راکٹ سسٹم پاک فوج اور سائنسدانوں کی انتھک محنت کا نتیجہ ہے۔ پاک فوج اور سائنسدانوں کی محنت ہر گزرتے دن کے ساتھ پاکستان کے دفاع کو ناقابل تسخیر بنا رہی ہے۔

واضح رہے کہ اس سے قبل دسمبر میں پاکستان نے مقامی طور پر تیار کردہ میزائل سسٹم ’’فتح 2‘‘ کا کامیاب تجربہ کیا تھا؛ جو ایویونکس، جدید ترین نیویگیشن سسٹم اور پرواز کی منفرد رفتار کی خصوصیات سے لیس میزائل تھا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں