سی ایس ایس کا امتحان کیا ہے اور کون دے سکتا ہے؟؟؟

سینٹرل سپیریئر سروسز (CSS) ایک اہم مسابقتی (Competitive) امتحان ہے جس کا انعقاد ہر سال فیڈرل پبلک سروس کمیشن (FPSC) کی جانب سے کیا جاتا ہے۔ یہ امتحانات سینٹرل سپیریئر سروس کے لیے ہوتے ہیں اور ہر سال ہزاروں امیدوار اس امتحان میں حصہ لیتے ہیں۔ سی ایس ایس امتحان پاس کرنے والے امیدواروں کو 17 گریڈ کے آفیسر کے طور پر بھرتی کیا جاتا ہے۔ ان امیدواروں کا مقصد CSS کے امتحان میں کامیابی کے بعد سول سروسز آف پاکستان میں شامل ہونا ہوتا ہے۔

سی ایس ایس امتحان کو طلباء کے لیے مشکل ترین امتحانات میں سے ایک سمجھا جاتا ہے۔ اس امتحان میں زیادہ سے زیادہ نمبروں کے ساتھ کامیابی حاصل کرنے کے لیے جامع مطالعہ کرنا نہایت اہم ہوتا ہے۔ سی ایس ایس امتحان کی تیاری کے لیے امیدواروں کو چھ لازمی مضامین اور چھ اختیاری مضامین کا انتخاب کرنا ہوتا ہے۔ اس امتحان کے لیے درخواستیں اکتوبر اور نومبر کے مہینوں میں کھولی جاتی ہیں، جبکہ پیپرز فروری کے مہینے میں ہوتے ہیں۔ سی ایس ایس امتحان کے متعلق تفصیلی معلومات جاننے کے لیے اس پوسٹ کو آخری تک لازمی پڑھیں۔۔۔

سی ایس ایس امتحان کی بنیادی معلومات:
سی ایس ایس امتحان کے متعلق چند بنیادی معلومات درج ذیل ہیں:-
۱۔ ایک امیدوار سی ایس ایس امتحان میں تین بار سے زیادہ مرتبہ نہیں بیٹھ سکتا

۲۔ CSS امتحان کے لیے درخواست گزار کی عمر کا حساب ہر سال 31 دسمبر کو ہوتا ہے۔ یعنی اگر آپ سی ایس ایس 2024 کے لیے درخواست دے رہے ہیں تو اس سال 31 دسمبر 2024 تک آپ کی عمر 21 سال سے کم یا 31 سال سے زیادہ نہیں ہونی چاہیے

۳۔ امیدوار کو CSS امتحان کے چار حصوں یعنی تحریری، میڈیکل، نفسیاتی اور زبانی ٹیسٹ میں حاضر ہونا پڑے گا اور ان تمام امتحانات میں پاس ہونا ضروری ہے

۴۔ تحریری امتحان میں چھ لازمی پرچے (Compulsory Papers) اور چھ اختیاری پرچے (Optional Papers) ہوتے ہیں

۵۔ لازمی پرچے میں پاس ہونے کے لیے کوالیفائنگ مارکس کم از کم 40% ہیں جبکہ اختیاری پرچے کے کوالیفائنگ مارکس 33% ہیں

۶۔ تحریری امتحان میں کامیاب ہونے والے امیدوار کو میڈیکل، نفسیاتی اور زبانی (Viva-Voce) ٹیسٹ کے لیے شارٹ لسٹ کیا جاتا ہے

۷۔ امیدوار اپنے کاغذات کی دوبارہ جانچ پڑتال کے لیے درخواست دے سکتا ہے۔ ری چیکنگ فیس فی صفحہ 500 روپے ہے۔

سی ایس ایس امتحان کے حصے:
سی ایس ایس کا امتحان درج ذیل چار حصوں پر مشتمل ہوتا ہے، ان چاروں حصوں میں کامیاب ہونے والا امیدوار سی ایس ایس افیسر بن سکتا ہے:
۱۔ تحریری امتحان
۲۔ میڈیکل ٹیسٹ
۳۔ نفسیاتی ٹیسٹ
۴۔ زبانی امتحان (viva voce/ interview)

۱۔ تحریری امتحان (written exam):
◄ یہ امتحان بارہ (12) پرچوں پر مشتمل ہوتا ہے۔ جن میں سے چھ (6) لازمی اور باقی چھ (6) اختیاری پرچے ہوتے ہیں۔ ہر پیپر کے کل 100 نمبر ہوتے ہیں۔ تحریری امتحان میں کل 1200 نمبر ہوتے ہیں، جن میں سے 600 نمبر لازمی پرچوں کے لیے اور 600 نمبر اختیاری پیپرز کے لیے ہیں۔ ہر پیپر کو حل کرنے کے لیے تقریباً 3 گھنٹے کا وقت دیا جاتا ہے

۲۔ میڈیکل ٹیسٹ:
شارٹ لسٹ کیے گئے امیدواروں کو میڈیکل ٹیسٹ سے گزرنا پڑتا ہے۔ اس میڈیکل ٹیسٹ کا مقصد یہ جانچنا ہے کہ امیدوار کسی بھی جسمانی بے ضابطگیوں سے پاک ہے۔ یہ امتحان FPSC کی طرف سے تشکیل کردہ میڈیکل بورڈ کے ذریعے کیا جاتا ہے۔ اگر کوئی امیدوار طبی تقاضوں کو پورا نہیں کرتا پاتا تو اسے معذور شخص کے علاوہ مقرر نہیں کیا جائے گا

۳۔ نفسیاتی ٹیسٹ:
شارٹ لسٹ کیے گئے امیدواروں کو نفسیاتی اور زبانی ٹیسٹ کے لیے بلایا جاتا ہے۔ نفسیاتی امتحان اور viva-voce دونوں کے ملا کر 300 نمبر ہیں۔ سائیکولوجیکل ٹیسٹ امیدوار کی ذہنی صلاحیتوں، رویہ کے پہلوؤں کا جائزہ لینے کے لیے ڈیزائن کیا گیا ہے جو سول سروسز کے لیے ان کی اہلیت کے حوالے سے اہم ہے

۴۔ زبانی ٹیسٹ (Viva Voce):
نفسیاتی ٹیسٹ کے بعد امیدواروں کو ‏Viva Voce میں حاضر ہونا پڑے گا۔ Viva Voce‏ کے 300 نمبر ہیں۔ Viva Voce امیدواروں کا ان کی اخلاقی خصوصیات، ذہانت اور علم کی بنیاد پر جائزہ لینے کے لیے ایک انٹرویو ہے۔ ‏زبانی ٹیسٹ (viva voce) کے لیے کوالیفائنگ نمبر 100 ہیں۔ 100 سے کم نمبر حاصل کرنے والے امیدواروں کو خدمات کے لیے نااہل قرار دیا جائے گا۔

اہلیت کا معیار:
درخواست گزار کو سی ایس ایس امتحان میں شرکت کرنے کے لیے درج ذیل اہلیت کے معیار پر پورا اترنا ہو گا:-

۱۔ قومیت کا معیار (Nationality Criteria):
◄ درخواست گزار کا پاکستان کا شہری یا ریاست جموں و کشمیر کا مستقل رہائشی ہونا ضروری ہے

۲۔ تعلیمی معیار (Educational Criteria):
◄ درخواست گزار کے پاس پاکستان کی کسی بھی یونیورسٹی سے کم از کم 2nd ڈویژن کے ساتھ بیچلرز ڈگری یا HEC کی تسلیم شدہ غیر ملکی یونیورسٹی سے مساوی اہلیت ہونی چاہیے۔

◄ اپنی بیچلر ڈگری میں 3rd ڈویژن رکھنے والا امیدوار صرف اس صورت میں امتحان کے لیے درخواست دے سکتا ہے، اگر اس نے ماسٹر ڈگری میں ہائیر ڈویژن حاصل کی ہو

۳۔ عمر کا معیار:
◄ سی ایس ایس امتحان کے لیے درخواست دینے والے امیدوار کی عمر تقریباً 21 سے 30 سال ہونی چاہیے

◄ سرکاری ملازم کے طور پر خدمات انجام دینے والے یا تسلیم شدہ قبائل اور علاقوں سے تعلق رکھنے والے امیدوار کے لیے عمر کی حد میں دو سال (زیادہ سے زیادہ عمر 32 سال کرنے) کی نرمی ہے

◄ صرف درج ذیل امیدواروں کو عمر کی حد میں دو سال (یعنی 32 سال) کی چھوٹ دی گئی ہے:
• جو امیدوار اس وقت سرکاری ملازم ہیں اور کم از کم 2 سال سے اسی سروس میں رہے ہوں۔ عمر میں یہ چھوٹ امیدوار کو محکمانہ اجازت نامہ کی فراہمی پر دی جائے گی۔ بینکوں، واپڈا، ریگولیٹری اتھارٹیز اور خود مختار اداروں کے ملازمین عمر میں رعایت کے حقدار نہیں ہیں

• مخصوص ذات اور Buddhist کمیونٹی سے تعلق رکھنے والے امیدواروں کو ڈی سی او/ پولیٹیکل ایجنٹ/ ڈسٹرکٹ مجسٹریٹ کی طرف سے جاری کردہ تصدیقی سرٹیفکیٹ لینا ہو گا

• آزاد کشمیر سے تعلق رکھنے والے امیدواروں کو کشمیر افیئر ڈویژن کے جاری کردہ سرٹیفکیٹ کی ضرورت ہوتی ہے۔ آزاد کشمیر اور گلگت بلتستان بشمول گلگت، دیامیر، بلتستان، غذر اور گھانچے (Ghanche) سے تعلق رکھنے والے افراد کے لیے ڈی سی او/پولیٹیکل ایجنٹ/ڈسٹرکٹ مجسٹریٹ کی طرف سے جاری کردہ سرٹیفکیٹ لینا ضروری ہے

• جو امیدوار جسمانی طور پر معذور، سماعت/گویائی سے محروم (بہرے اور گونگے) اور بصارت سے محروم (نابینا) ہیں، انہیں وفاقی/صوبائی حکومت کی جانب سے اس مقصد کے لیے نامزد کردہ مجاز اتھارٹی کی طرف سے جاری کردہ معذوری کا سرٹیفکیٹ جمع کروانا ہو گا.

امتحان اور انٹرویو کے مقامات:
سی ایس ایس کا امتحان اور انٹرویو پاکستان کے درج ذیل شہروں میں منعقد کیا جاتا ہے…

◄ سی ایس ایس امتحان کے مقامات:
کراچی، لاہور، اسلام آباد، پشاور، ایبٹ آباد، بہاولپور، ڈی آئی خان، ڈیرہ غازی خان، فیصل آباد، گلگت، گوجرانوالہ، حیدر آباد، خضدار، لاڑکانہ، ملتان، مظفرآباد، اوکاڑہ، کوئٹہ، راولپنڈی، سرگودھا، سیالکوٹ، سکردو اور سکھر

◄ انٹرویو کے مقامات:
کراچی، لاہور، اسلام آباد، پشاور اور کوئٹہ

سی ایس ایس امتحان کی فیس کا ڈھانچہ:
سی ایس ایس امتحان کے لیے بنیادی درخواست کی فیس کافی کم ہے۔ مختلف مراحل اور سرگرمیوں کے لیے فیس کا ڈھانچہ ددج ذیل ہے:
۱۔ تحریری امتحان-2200 روپے

۲۔ پیپر کی دوبارہ گنتی-500 روپے

۳۔ میڈیکل بورڈ کی فیس-1400 روپے

۴۔ طبی معائنے کی فیس-100 روپے

سی ایس ایس امتحان کے لیے اپلائی کرنے کا طریقہ کار:-
◄ سی ایس ایس امتحان کے لیے درخواست دینے کے لیے درج ذیل مراحل پر عمل کریں:

۱۔ امتحان کی فیس قریبی گورنمنٹ ٹریژری / اسٹیٹ بینک آف پاکستان / نیشنل بینک آف پاکستان اکاؤنٹ ہیڈ “”CO2102-Organs of State Exam Fee” (FPSC رسید) کے تحت جمع کروائیں

۲۔ FPSC کی آفیشل ویب سائٹ پر ‘آن لائن درخواست فارم’ پُر کریں۔ اسی آن لائن فارم کا ایک پرنٹ (hardcopy) بھی نکلوا کے اپنے پاس رکھیں

۳۔ آن لائن فارم کی ہارڈ کاپی، دستاویزات کی کاپیاں اور بینک کی رسید کے ایک ساتھ جمع کر کے FPSC ہیڈکوارٹر کو بھیجیں

۴۔ اپنی مکمل درخواست FPSC ہیڈ کوارٹر اسلام آباد تک آخری تاریخ کے دس دنوں کے اندر اندر لازمی پہنچائیں۔

◄ سی ایس ایس امتحان کے لیے آن لائن اپلائی کرنا لازمی ہے، لہٰذا آن لائن درخواست جمع کروانے کے لیے درج ذیل مراحل پر عمل کریں:

۱۔ آن لائن درخواست دینے کے لیے اپنی ذاتی تفصیلات، شناختی کارڈ نمبر، بینک کی تفصیلات، اختیاری مضامین کے نام، تعلیمی تفصیلات، تجربے کی تفصیلات اور پوسٹوں کی ترجیحات درکار ہیں

۲۔ اپنی تمام تر معلومات کو احتیاط اور درست طریقے سے فراہم کریں

۳۔ آن لائن فارم پُر کرنے کے بعد آخر میں “SUBMIT” پر کلک کریں

۴۔ جب آپ آن لائن درخواست جمع کرائیں گے، تو آپ کو اپنی درخواست کی تصدیقی ای میل موصول ہو گی۔ اسی ای میل میں آپ کی درخواست کی ٹریکنگ آئی ڈی (Tracking ID) بھی موجود ہو گی

۵۔ آپ اپنے شناختی کارڈ نمبر اور اپنی درخواست کی ٹریکنگ ID کی مدد سے “Take Printout” پر کلک کر کے جمع کرائی گئی آن لائن درخواست کا پرنٹ آؤٹ لیں

۶۔ اگر آپ سے آن لائن درخواست کی معلومات درج کرتے ہوئے کوئی غلطی ہوئی کے تو آپ اپنی درخواست کی ہارڈ کاپی پر اسے درست کریں اور اس کے ساتھ اپنے دستخط بھی کریں۔

دستاویزات کی فہرست:
آن لائن درخواست جمع کروانے کے بعد، آن لائن فارم کے پرنٹ کے ساتھ مندرجہ ذیل دستاویزات FPSC ہیڈکوارٹر، اسلام آباد کو بذریعہ ڈاک یا ہاتھ سے بھجوائیں:
۱۔ تعلیمی دستاویزات کی کاپیاں (سرٹیفکیٹ اور ڈگریاں)

۲۔ تصاویر

۳۔ دیگر مطلوبہ دستاویزات

۴۔ جمع شدہ امتحانی فیس کی بینک رسید

۵۔ تجربہ سرٹیفکیٹ (اگر قابل اطلاق ہو)

۶۔ اشتہار میں درج مطلوبہ دستاویزات

۷۔ اگر کسی درخواست دہندہ نے عمر کی حد (دو سال تک) میں نرمی کے لیے درخواست دی ہے، تو اسے متعلقہ حکام کے ذریعے سرٹیفکیٹ جمع کرانا ہو گا۔ ایسے تمام سرٹیفکیٹس ‏FPSC کی آفیشل ویب سائٹ پر دستیاب ہیں۔

سی ایس ایس امتحان میں حصہ لینے سے آپ کو اپنے ملک کے لیے کچھ خاص کرنے کا موقع ملے گا۔ یہ امتحان آپ کو ایسے عہدوں پر لے جا سکتا ہے جہاں آپ اپنے علم اور قابلیت سے اپنے ملک کی خدمت کر سکتے ہیں۔ اگر آپ اپنی صلاحیتوں اور محنت سے اپنے ملک کی ترقی میں اپنا حصہ ڈالنا چاہتے ہیں تو CSS کا امتحان لازمی دیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں