رفح آپریشن جاری رہا تو قاہرہ اسرائیل کیساتھ امن معاہدہ منسوخ کر دے گا، مصر نے خبردار کر دیا

مصری حکام نے حال ہی میں مصر کا دورہ کرنے والے امریکی انٹیلی جنس ڈائریکٹر ولیم برنز کو اسرائیل پر شدید دباؤ ڈالنے اور اسے رفح میں اپنا آپریشن ختم کرنے کے لیے خبردار کر دیا۔ انہوں نے امریکی ڈائریکٹر کو اس بات سے بھی آگاہ کیا کہ اسرائیل سنجیدگی سے مذاکرات کی طرف واپس آئے اور رفح میں آپریشن ختم کرے۔

مصر نے امریکی سفیر کو آگاہ کیا کہ اگر رفح آپریشن جاری رہا تو قاہرہ امن معاہدہ کو منسوخ کر سکتا ہے۔ اسرائیلی اخبار کی رپورٹ کے مطابق غزہ میں جنگ شروع ہونے کے بعد پہلی بار قاہرہ نے امدادی ٹرک ڈرائیوروں کو کہا ہے کہ وہ رفح کراسنگ کے مصر کی جانب کے علاقے کو خالی کر دیں۔

مصر غزہ میں سکیورٹی خدشات کے پیش نظر رفع کراسنگ کی اپنی جانب علاقے میں حفاظتی اقدامات مضبوط بنا رہا ہے۔ اسرائیلی فوج نے منگل کو اعلان کیا تھا کہ اس نے پیر کے روز شروع ہونی والے فوجی آپریشن میں غزہ کی پٹی کو مصری سرزمین سے الگ کرنے والی رفع کی زمینی گزرگاہ کی فلسطینی طرف کا مکمل کنٹرول سنبھال لیا ہے۔

مصری وزارت خارجہ نے موجودہ ثالثی کی کوششوں کو کامیاب بنانے کے لیے تمام بین الاقوامی کوششوں کو جاری رکھنے اور دونوں فریقین کو معاہدے تک پہنچنے کے لیے ضروری اقدامات کرنے پر زور دیا۔

واضح رہے کہ غزہ میں 7 اکتوبر سے اب تک اسرائیلی بربریت اور کے نتیجے میں اب تک شہید ہونیوالے فلسطینیوفضائی حملوں کے نتیجے میں 34 ہزار سے زائد فلسطینی شہید ہو چکے ہیں جبکہ 77 ہزار سے زائد زخمی ہوئے ہیں جن میں بچوں اور خواتین کی تعداد زیادہ ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں