پی آئی اے کی پرواز بچے کی میت اسلام آباد چھوڑ کر لواحقین کو لے کر سکردو پہنچ گئی

پاکستان انٹرنیشنل ائیر لائنز (پی آئی اے) نے اسلام آباد سے سکردو آنے والی پرواز میں ایک بچے کی میت کو ائیرپورٹ پر چھوڑ کر صرف لواحقین کو اپنی منزل تک پہنچا دیا۔ یہ واقعہ جمعرات کو پیش آیا جب بچے کے والدین اس کی میت کو اپنے آبائی گاؤں کھرمنگ لے جانے کے لیے اسلام آباد سے سکردو آرہے تھے۔

گزشتہ روز سکردو کے علاقے کھرمنگ سے تعلق رکھنے والے شہری کا چھ سالہ بیٹا مجتبیٰ راولپنڈی کے بے نظیر بھٹو ہسپتال میں انتقال کر گیا تھا۔ دوسری جانب پی آئی اے انتظامیہ کی جانب سے اس واقعہ کا نوٹس لے لیا گیا ہے۔ ترجمان پی آئی اے نے اپنے بیان میں کہا کہ قومی ائیرلائن نے معاملے کی انکوائری کا حکم دے دیا ہے اور اس واقعہ میں ملوث افراد کا تعین کیا جائے گا۔

تفصیلات کے مطابق لواحقین نے بچے کی میت کو پی آئی اے کارگو میں بک کروایا تھا، مگر اسے جہاز میں نہیں رکھا گیا، پی آئی اے کی پرواز نے اسلام آباد ایئرپورٹ پر میت کو چھوڑ دیا اور لواحقین کو سکردو منتقل کر دیا، جس پر بچے کے والدین اور لواحقین میں غم و غصے کی لہر دوڑ گئی۔

جب والدین کو اس واقعے کے بارے میں معلوم ہوا کہ ان کے بچے کی میت سکردو نہیں پہنچی، تو وہ غم سے نڈھال ہو کر بے ہوش ہو گئے۔ اس بیان کے مطابق، میت کو کارگو ٹرمینل کولڈ سٹوریج منتقل کر دیا گیا ہے۔ لواحقین کے خاندان کے تین افراد کو سکردو سے اسلام آباد لایا جا رہا ہے اور کل تینوں افراد کو میت کے ساتھ دوبارہ گلگت روانہ کیا جائے گا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں