پاکستان ویمنز ٹیم کی سابق کپتان بسمہ معروف کا کرکٹ سے ریٹائر منٹ کا اعلان

پاکستان ویمن ٹیم کی سابق کپتان بسمہ معروف نے کرکٹ کو خیر آباد کہہ دیا۔ انہوں نے ویسٹ انڈیز کے خلاف ون ڈے سیریز میں ٹیم کی بدترین کارکردگی کے بعد فوری طور پر کرکٹ سے ریٹائرمنٹ کا اعلان کیا ہے۔ انہیں کرکٹ میں نمایاں کارکردگی کی بنیاد پر تمغہ امتیاز سے بھی نوازا گیا تھا۔

بسمہ نے 276 بین الاقوامی میچوں میں پاکستان کی نمائندگی کی۔ انہوں نے 6,262 رنز بنائے جن میں 33 نصف سنچریاں شامل ہیں اور اپنے ادائیں ہاتھ کے لیگ اسپن سے 80 بین الاقوامی وکٹیں بھی حاصل کیں۔ انہوں نے اپنا 2006 میں ہندوستان کے خلاف ون ڈے ڈیبیو کیا اور 2009 میں آئرلینڈ کے خلاف ٹی ٹوئنٹی ڈیبیو کیا۔

بسمہ معروف نے اپنے شاندار کیریئر کے دوران 2010 اور 2014 کے ایشین گیمز میں دو بار گولڈ میڈل حاصل کیا۔ انہوں نے 96 بین الاقوامی میچوں میں ٹیم کی کپتانی بھی کی۔ انہوں نے 2009، 2013، 2017 اور 2022 کے آئی سی سی ویمنز 50 اوور ورلڈ کپ کے چار ایڈیشنز میں پاکستان کی کپتانی کی، اور نیوزی لینڈ میں 2022 کے ایڈیشن میں ٹیم کی نمائندگی بھی کی۔

انہوں نے 2009، 2010، 2012، 2014، 2016، 2018، 2020 اور 2023 میں آئی سی سی ویمنز ٹی ٹونٹی ورلڈ کپ کے آٹھ ایڈیشنز میں پاکستان ویمن ٹیم کی قیادت کی، جبکہ 2020 اور 2023 کے ایڈیشنز میں جنوبی افریقہ میں ٹیم کی نمائندگی کی۔

بسمہ معروف نے اپنے ریٹائرمنٹ کے فیصلے پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ “میں نے اس کھیل سے ریٹائر ہونے کا فیصلہ کیا ہے جس سے مجھے سب سے زیادہ پیار و محبت ہے، یہ ایک بہت ہی خوبصورت اور نا قابل یقین سفر رہا ہے، جو کہ مشکلات، کامیابیوں، چیلنجز اور یادوں سے بھرا ہوا ہے. میری ساتھی کھلاڑیوں اور فیملی کا شکریہ ادا کرتی ہوں جنہوں نے میرے ہر قدم پر بھرپور ساتھ دیا”

انہوں نے مزید کہا کہ “میں پاکستان کرکٹ بورڈ کا بھی شکریہ ادا کرنا چاہتی ہوں کہ انہوں نے مجھ پر اعتماد کیا اور اپنی صلاحیتوں کو ظاہر کرنے کے لیے ایک بہترین پلیٹ فارم مہیا کیا، پی سی بی کی طرف سے تعاون انمول رہا ہے، خاص طور پر انہوں نے میرے والدین کی پالیسی کو نافذ کرنے میں میری مدد کی اور مجھے ماں بنتے ہوئے اپنے ملک کی اعلیٰ سطح پر نمائندگی کرنے کا موقع دیا”

پاکستان ویمن کرکٹ ٹیم کی سربراہ تانیہ ملک نے اس فیصلے کے متعلق اپنی رائے کا اظہار کرتے ہوئے کہا: “جب سے بسمہ معروف نے بین الاقوامی کرکٹ کو خیر آباد کہا، ہم سب پاکستانی خواتین کرکٹ میں ان کی بے پناہ شراکت کے مقروض ہیں۔ پاکستان کرکٹ بورڈ کی جانب سے ہم بسمہ کے عزم اور ٹیم و ملک کے لیے گراں قدر خدمات کے لیے ان کا دل سے شکریہ ادا کرتے ہیں۔میں بسمہ کی مستقبل کی کوششوں میں نیک خواہشات کا اظہار کرتی ہوں اور میری دعا ہے کہ اس کا آگے کا سفر بھی انتہائی فائدہ مند اور کامیاب ہو جتنا اس کا کرکٹ کیریئر رہا ہے”

اپنا تبصرہ بھیجیں