ہماری حکومت کی اولین ترجیح معیاری تعلیم کا فروغ ہے، وزیراعظم شہباز شریف

وزیراعظم شہباز شریف نے برطانیہ کی معروف جامعات کے نمائندگان سے ملاقات کی۔ اس وفد کی قیادت برطانیہ کے انٹرنیشنل ایجوکیشن چیمپئن سر اسٹیو اسمتھ کر رہے تھے۔ اس ملاقات میں وفد نے برطانیہ اور پاکستان کے درمیان اعلیٰ تعلیمی تبادلے پر بات چیت کی۔

اس موقع پر وزیراعظم شہباز شریف نے کہا کہ ہماری حکومت کی اولین ترجیح معیاری تعلیم کا فروغ ہے، ہماری بھرپور کوشش ہے کہ کوئی بھی بچہ اسکول سے باہر نہ ہو، اس حوالے سے وفاقی حکومت صوبائی حکومتوں کے ساتھ مل کر اس مسئلے کا حل تلاش کر رہی ہے۔

انہوں نے کہا کہ ہم نے پنجاب میں ایجوکیشن اینڈو مینٹ فنڈ کا اجراء کیا تھا، ہم ایسے اقدامات وفاقی سطح پر بھی اٹھائیں گے، حکومت تعلیمی شعبے کی ترقی کے لیے فوری اقدامات اٹھا رہی ہے، پاکستان اور برطانیہ کے تعلقات دہائیوں پر محیط ہیں جن میں وقت کے ساتھ ساتھ مزید بہتری آرہی ہے۔

وزیراعظم نے برطانیہ کی جانب سے پاکستان میں تعلیمی شعبے میں تعاون کو سراہتے ہوئے کہا کہ وہ چاہتے ہیں کہ دونوں ممالک کے درمیان تجارت و تعلیمی شعبوں میں تعاون کو بڑھایا جائے، پاکستانی اور برطانوی یونیورسٹیوں کے درمیان ٹیکنالوجی اور تحقیق کے شعبوں میں اشتراک ہونا چاہئے، برطانیہ کی مدد سے پاکستانی اساتذہ کی تربیت اور استعداد کار میں اضافہ ممکن ہو گا۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان برطانیہ کے تعلیمی شعبے کی استعداد سے فائدہ اٹھانا چاہتا ہے، ہمیں خوشی ہے کہ پاکستانی اور برطانوی جامعات نے مشترکہ بنیادوں پر ڈگری پروگرامز کا آغاز کیا ہےاور ہم پاکستان میں اعلیٰ تعلیم کو فروغ دینے اور اس کا معیار بہتر بنانے کے لیے برطانیہ کے تعلیمی شعبے کے ساتھ مل کر کام کرنا چاہتے ہیں۔

وزیراعظم نے مزید کہا کہ سائنس اور ٹیکنالوجی کسی بھی قوم کی ترقی کی ضمانت ہے۔ انہوں نے برطانوی وفد کو برطانیہ ایجوکیشن گیٹ وے کے بارے میں بریفننگ دیتے ہوئے کہا کہ یہ گیٹ وے پاکستان کے تعلیمی دائرہ کار کو مزید بڑھا رہا ہے جس سے دونوں ممالک میں تعلیمی شعبے میں تعاون بڑھانے میں مدد ملے گی۔ وفد نے برطانیہ اور پاکستان کے درمیان اعلیٰ تعلیم کے شعبے میں اشتراک اور تعاون کے حوالے سے گہری دلچسپی کا اظہار بھی کیا۔

ملاقات میں وفاقی وزیر تعلیم خالد مقبول صدیقی، رکن قومی اسمبلی رومینہ خورشید عالم، وزیراعظم کے معاون خصوصی طارق فاطمی، برطانوی کونسل کے کنٹری ڈائریکٹر جیمز ہیمپسن، چیئرمین ہائر ایجوکیشن کمیشن، اور متعلقہ اعلیٰ سرکاری افسران موجود تھے۔ وفد نے پاکستان میں شاندار میزبانی کے لئے وزیراعظم اور حکومتی اداروں کا شکریہ ادا کیا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں