سابق آسٹریلوی و کیوی وکٹ کیپر بیٹسمین کو پاکستان کرکٹ ٹیم کی کوچنگ کی پیشکش!

ذرائع کے مطابق پاکستان کرکٹ بورڈ نے نیوزی لینڈ کے سابق وکٹ کیپر بلے باز لیوک رونچی سے قومی ٹیم کی کوچنگ کے لیے رابطہ کیا ہے۔

ذرائع کے مطابق رونچی نے پاکستان کرکٹ ٹیم کی کوچنگ کی پیشکش پر غور کرنے کے لیے کچھ وقت کی درخواست کی ہے۔لیوک رونچی اس وقت نیوزی لینڈ کے اسسٹنٹ کوچ کے طور پر خدمات انجام دے رہے ہیں۔

لیوک رونچی نے بین الاقوامی کرکٹ میں آسٹریلیا کی قومی کرکٹ ٹیم اور نیوزی لینڈ کی قومی کرکٹ ٹیم دونوں کی نمائندگی کی۔ رونچی وہ واحد کھلاڑی ہیں جو کرکٹ کی تاریخ میں آسٹریلیا اور نیوزی لینڈ دونوں کے لیے کھیل چکے ہیں اور وہ نیوزی لینڈ ورلڈ کپ ٹیم کا حصہ تھے جو 2015 کے کرکٹ ورلڈ کپ میں آسٹریلیا کے ہاتھوں فائنل میں شکست کے بعد رنر اپ رہی تھی۔ انہوں نے نیوزی لینڈ کے ڈومیسٹک میچوں میں ویلنگٹن کے لیے کھیلا اور مختلف فریقوں کے لیے ٹوئنٹی 20 میچز کھیلے۔ انہوں نے جون 2017 میں بین الاقوامی کرکٹ سے ریٹائرمنٹ لے لی۔

یہ بات قابل غور ہے کہ آسٹریلیا اور نیوزی لینڈ دونوں کی نمائندگی کرنے والے رونچی نے اس سے قبل پی سی بی کی جانب سے قومی ٹیم کی کوچنگ کی پیشکش کو مسترد کر دیا تھا۔ ان کے انکار کے بعد، بریڈ برن کو کوچنگ کے عہدے پر مقرر کیا گیاتھا۔

یہ پیشرفت پی سی بی کے چیئرمین محسن نقوی کے حالیہ بیان کے بعد ہوئی ہے جس میں نیوزی لینڈ کے خلاف 18 اپریل سے شروع ہونے والی آئندہ پانچ میچوں کی T20I سیریز کے لیے کوچنگ پینل کو حتمی شکل دینے میں بورڈ کی کوششوں کا ذکر کیا گیا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں