گمشدہ بلوچ سٹوڈنٹس بازیابی کیس میں تینوں حساس اداروں کے ڈی جیز پر مشتمل کمیٹی قائم

اسلام آباد ہائیکورٹ نے گمشدہ بلوچ طلباء کی بازیابی کے لیے ایک کمیٹی قائم کرنے کا فیصلہ کر لیا، جس میں ڈی جی آئی ایس آئی، ڈی جی ایم آئی اور ڈی جی انٹیلیجنس بیورو کے ڈی جیز شامل ہیں۔ اس کمیٹی کی معاونت اٹارنی جنرل منصور اعوان کریں گے۔

اسلام آباد ہائیکورٹ کے جسٹس محسن اختر کیانی نے گزشتہ سماعت کا تحریری حکم نامہ جاری کیا ہے۔ اس کمیٹی کے زیرِ اہتمام گمشدہ بلوچ طلباء اور نئے لاپتہ ہونے والوں کے حوالے سے رپورٹ پیش کی جاٸے گی، جس پر عدالت نے متعلقہ ضلع اور ڈویژن کے سیکٹر کمانڈر سے معلومات حاصل کرنے کا حکم دیا ہے۔

عدالت نے کمیٹی کو جبری گمشدگی میں ملوث ماتحت حکام کے خلاف کارروائی کے لئے سفارشات پیش کرنے کا بھی حکم دیا ہے۔ واضح ہوا ہے کہ یہ اقدامات گمشدہ بلوچ طلباء کی تلاش اور ان کی حفاظت کے لئے کئے گئے ہیں۔

عدالت نے وزیراعظم، داخلہ و دفاع کے وزراء اور سیکریٹریز کو بھی اگلی سماعت پر طلب کر لیا ہے، جو 28 فروری کو ہو گی۔ امید ہے کہ یہ اقدامات گمشدہ بلوچ طلباء کی سلامتی اور بازیابی کے راستے میں مددگار ثابت ہوں گے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں