پاکستان کی جوابی کارروائی: ایران میں دہشتگردوں کی پناہ گاہوں پر حملے

ترجمان دفتر خارجہ کے مطابق پاکستان نے ایران کے صوبہ سیستان و بلوچستان میں آج صبح دہشت گردوں کے ٹھکانوں کو نشانہ بنایا. اس حملے میں متعدد دہشت گرد مارے گئے. اس آپریشن کا کوڈ نام “مرگ بر سرمچار” ہے.

دفتر خارجہ کا کہنا تھا کہ پچھلے کئی سالوں کے دوران, پاکستان نے ایران کے ساتھ مصروفیات کے دوران پاکستانی نژاد دہشت گردوں کی محفوظ پناہ گاہوں کے بارے میں ایران کو اپنے خدشات سے اس کا اظہار کیا. یہ لوگ اپنے آپ کو “سرمچار” کہتے ہیں. پاکستان نے کئی بار ان دہشت گردوں کی موجودگی اور سرگرمیوں کے بارے میں ایران کو کئی بار ٹھوس شواہد کے ساتھ ڈوزئیرز بھی شیئر کیے.

تاہم پاکستان کی طرف سے دئیے جانے والے شواہد پر عمل نہ کیا گیا اور یہ نام نہاد سر مچاروں نے پاکستانیوں کا خون بہایا. لہذا فورسز کی طرف سے ان سرمچاروں کے خلاف آج صبح بڑے پیمانے پر کاروائی کی گئی.
آج کی یہ کاروائی مسلح افواج کی پیشہ ورانہ مہارت کا منہ بولتا ثبوت ہے اور پاکستان بھی اپنی عوام کے تحفظ اور سلامتی کے لئے تمام ضروری اقدامات کرتا رہے گا.

دفتر خارجہ کا مزید بھی کہنا تھا کہ پاکستان اسلامی جمہوریہ ایران کی خود مختاری اور علاقائی سالمیت کا مکمل احترام کرتا ہے اور آج کے ایکٹ کا واحد مقصد پاکستان کی سلامتی اور قومی مفاد کا حصول تھا جس پر کوئی سمجھوتہ نہیں کیاجاسکتا.

پاکستان کسی کو بھی اپنی خود مختاری اور علاقائی سالمیت کو نقصان پہنچانے کی اجازت نہیں دے گا.

ترجمان دفتر خارجہ کا کہنا تھا کہ ایران ایک بردار ملک ہے اور پاکستانی قوم اپنے ایرانی بہن بھائیوں سے بہت محبت کرتی ہے.

اپنا تبصرہ بھیجیں